Post Tagged with: "Inflation"

احمقوں کی جنت اور زمینی حقائق

احمقوں کی جنت اور زمینی حقائق

ایک معاشی دیوالیہ پن کی کیفیت ہے جسے ٹالنے کے لئے پالیسی سازوں کے پاس آپشن بہت محدود ہیں۔

April 15, 2019 ×
استحصالی معیشت کی شعبدہ بازیاں

استحصالی معیشت کی شعبدہ بازیاں

نودولتیوں کی اس حکومت کے ماہرین اور جگادری ان وارداتوں کو نئے نئے نام دیں گے۔

September 6, 2018 ×
معاشی جبر کا اندھیر!

معاشی جبر کا اندھیر!

پچھلے مالی سال میں وفاقی حکومت نے 2.1 ہزار ارب روپے کے قرضے لیے جو روزانہ اوسطاً 5.7 اَرب روپے بنتے ہیں۔

August 5, 2016 ×
طبقاتی نظام کے دُہرے معیار!

طبقاتی نظام کے دُہرے معیار!

لاہور میں نرسز کے دھرنوں کے دوران وزیرقانون رانا ثنا اللہ کی اخلاق سے گری ہوئی گفتگوہو یا سیکرٹری ہیلتھ پنجاب کا رویہ، ان میں واضح طور پر محنت کش طبقے سے تعصب اور نفرت جھلکتی نظر آتی ہے۔

June 11, 2016 ×
پاکستان: عہد نو کے تقاضے سوال کرتے ہیں!

پاکستان: عہد نو کے تقاضے سوال کرتے ہیں!

| تحریر: آدم پال | ٹی وی چینل اور اخبارات خبروں سے بھرے ہوئے ہیں۔ سیاستدانوں کی بد عنوانی، مہنگائی، لوڈ شیڈنگ اور اس کے خلاف احتجاج، گرمی کی شدت سے مرنے والوں کی خبریں ہی خبریں ہیں۔ اسی کے ساتھ ساتھ رینجرز اور مختلف دفاعی اداروں اور ان کے […]

July 27, 2015 ×
بس کرو اب بس! روزانہ بجٹ؟

بس کرو اب بس! روزانہ بجٹ؟

| تحریر: آدم پال | ہر سال کی طرح اس سال بھی سالانہ بجٹ کی رسم ٹی وی چینلوں پر براہ راست دکھائی جائے گی۔ جھوٹ، فریب، دھوکہ دہی اور جعلسازی کے نئے ریکارڈ قائم کرنے کا یہ اچھا موقع ہوتا ہے لیکن ستم یہ ہے کہ ایسے تاریخی لمحے […]

June 4, 2015 ×
بے لگام شوگرملزمافیا

بے لگام شوگرملزمافیا

[تحریر:قمرالزماں خاں] پانچ اورچھ دسمبرکو گنے کے کاشتکاروں نے سندھ اور پنجاب کا بارڈربند کردیا اور دونوں روز کئی کئی گھنٹے تک ٹرانسپورٹ کی نقل وحرکت بند رہی۔ گنے کے کاشت کار گنے کی قیمتوں میں کمی کرنے پر احتجاج کررہے تھے۔ گنے کے کرشنگ سیزن کے آغاز سے قبل […]

December 22, 2014 ×
پاکستان: بربادیوں کی داستان

پاکستان: بربادیوں کی داستان

[تحریر: آدم پال] عمران خان کے جلسوں اور دھرنوں سے لے کر حکمرانوں کے بیرون ملک کے دوروں سمیت بہت سے نان ایشوز عوام کے شعور پر جبراًمسلط کرنے کی سر توڑ کوششوں کے باوجود زندگی کی تلخ حقیقتیں ہر روز محنت کش عوام کے صبر اور حوصلے کا امتحان […]

November 28, 2014 ×
اجرت میں اضافے کی لڑائی

اجرت میں اضافے کی لڑائی

[تحریر: راشد خالد] محنت کشوں کے روز و شب کی تلخی کی کس کو فکر ہے۔ ہر روز زندگی مہنگی ہوجاتی ہے اور موت سستی۔ دوسری جانب حکمران طبقات محنت کشوں کے خو ن اور پسینے سے پیدا کردہ دولت پر عیاشی کی زندگی گزارتے ہیں۔ محنت کش جب اپنی […]

October 4, 2014 ×
جب وقت کا بدلا مزاج؟

جب وقت کا بدلا مزاج؟

[تحریر: لال خان] سٹیٹ بینک کی تازہ رپورٹ بھی بری خبر ہی لائی ہے۔ اس ملک میں پہلے بھی کم ہی کوئی اچھی خبر سننے کو ملتی ہے لیکن وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ بری خبروں کا تواتر اور شدت بڑھتی ہی چلی جارہی ہے۔ حالیہ رپورٹ میں انتباہ کیا […]

September 23, 2014 ×
بجٹ 2014-15ء: سرمائے کا محنت پر ایک اور حملہ

بجٹ 2014-15ء: سرمائے کا محنت پر ایک اور حملہ

[تحریر: پارس جان] ملکی معیشت کی شرحِ نمو کا تو پتہ نہیں لیکن حکمران طبقے کی بغیر شرمندگی کے جھوٹ بولنے کی صلاحیت کی ترقی کی شرح تو آسمان سے باتیں کرنے لگی ہے۔ ابھی گزشتہ ہفتے پیش کیے جانے والے اکنامک سروے اور سالانہ وفاقی بجٹ کو ہی لے […]

June 8, 2014 ×
دیوالیہ معیشت کی ’’بجٹ سازی‘‘

دیوالیہ معیشت کی ’’بجٹ سازی‘‘

[تحریر: لال خان] کچھ دہائیاں پہلے تک سالانہ بجٹ کا اعلان ایک اہم اور مشہور واقعہ ہوا کرتا تھا۔ بجٹ تقریر کے وقت سڑکوں پر سے ٹریفک غائب ہوجاتی تھی۔ خاندان کے افراد یا پھر یاروں دوستوں کے گروہ بڑی خاموشی، انہماک اور دلچسپی سے ٹیلیوژن کے سامنے یا ریڈیو […]

June 5, 2014 ×
بجٹ 2014-15ء: بھیک مانگتے رہو، بھکاری بناتے رہو!

بجٹ 2014-15ء: بھیک مانگتے رہو، بھکاری بناتے رہو!

[تحریر: آدم پال] جون کا مہینہ آتے ہی اعداد و شمار کی سالانہ جگالی کا وقت بھی آجا تا ہے جسے عرفِ عام میں بجٹ کہتے ہیں۔ ہر وزیر خزانہ اپنی تقریروں میں ترقی اور خوشحالی کی ایسی تصویریں پیش کرتا ہے جس سے شبہ ہوتا ہے کہ عنقریب ملک […]

May 22, 2014 ×
ایران: نئے سال کا پیغام

ایران: نئے سال کا پیغام

[تحریر: حمید علی زادے، ترجمہ: حسن جان] ایران کے روایتی کیلنڈر کے مطابق نئے سال کا آغاز ہو چکا ہے۔نوروز کا یہ تہوار عام طور پر خوشیوں اور آرام سے بھری چھٹیوں کا پیغام سمجھا جاتا ہے۔ تاہم اس بار یہ چھٹیاں اکثر محنت کش گھرانوں کے لیے پریشانی اور […]

April 27, 2014 ×
طبقہ پروری

طبقہ پروری

[تحریر: لال خان] قومی اسمبلی میں وقفہ سوالات کے دوران ایم این اے لال چند کے سوال کے جواب میں وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے ایوان کو بتایا کہ ’’جولائی 2013ء سے فروری 2014ء تک حکومت نے سرمایہ دار طبقے کو 320 ارب روپے سے زائد کی چھوٹ دی ہے۔‘‘ […]

March 28, 2014 ×