Post Tagged with: "Imran Kamyana"

گھمبیر بحران میں گھِرا ’نیا پاکستان‘

گھمبیر بحران میں گھِرا ’نیا پاکستان‘

پاکستانی سرمایہ داری کے بڑھتے ہوئے بحران کا ایک جائزہ

November 18, 2018 ×
’تبدیلی‘ کا کیا ہو گا؟

’تبدیلی‘ کا کیا ہو گا؟

جو امیدیں عمران خان سے وابستہ کی گئی ہیں اور جو خواب اس نے دکھائے ہیں ان کا بہت جلد ٹوٹنا ناگزیر ہے۔

July 28, 2018 ×
کارل مارکس کون تھا؟

کارل مارکس کون تھا؟

مروجہ نظریات اور رجحانات نے مارکس کو مسلسل اور بے رحم جدوجہد کرنے اور بعض اوقات انتہائی وحشیانہ اور ننگ انسانیت ذاتی حملوں کا مقابلہ کرنے پر مجبور کیا۔

May 5, 2018 ×
سوشلسٹ انقلاب اور حقوقِ نسواں کی جدوجہد

سوشلسٹ انقلاب اور حقوقِ نسواں کی جدوجہد

قومی سوال کی طرح خواتین کے حقوق اور آزادی کے سوال کو جب تک طبقاتی بنیادوں پر نہ سمجھا جائے کوئی حقیقت پسندانہ نتیجہ اخذ نہیں کیا جا سکتا۔

March 8, 2018 ×
نوشتۂ دیوار!

نوشتۂ دیوار!

آج بالعموم پوری دنیا ایک عدم استحکام اور انتشار کی زد میں نظر آتی ہے۔

January 2, 2018 ×
امریکی انتخابات: ٹرمپ کیسے جیت گیا!

امریکی انتخابات: ٹرمپ کیسے جیت گیا!

ایک طرف ٹرمپ کی جیت سے پھیلنے والی مایوسی اور دوسری طرف اس سے وابستہ امیدیں، دونوں کے ٹوٹنے کے لئے بہت طویل عرصہ درکار نہیں ہو گا۔

November 10, 2016 ×
یونان کا بحران

یونان کا بحران

یونان کا بحران ختم نہیں ہوا بلکہ منظر عام سے غائب کر دیا گیا ہے۔

September 21, 2016 ×
برطانیہ کی علیحدگی اور یورپی یونین کا مستقبل

برطانیہ کی علیحدگی اور یورپی یونین کا مستقبل

ریفرنڈم کے نتائج نے نہ صرف برطانیہ بلکہ پورے یورپی یونین اور اس سے باہر بھی سیاسی اور معاشی طور پر بھونچال برپا کر دیا ہے۔

June 25, 2016 ×
یونان: انقلابی تحریک کا نیا ابھار!

یونان: انقلابی تحریک کا نیا ابھار!

| تحریر: عمران کامیانہ | یونان میں 5 جولائی کو ہونے والے ریفرنڈم میں محنت کشوں اور نوجوانوں نے ٹرائیکا (یورپی مرکزی بینک، آئی ایم ایف، یورپی کمیشن) کی شرائط کر یکسر مسترد کر دیا ہے۔ یہ ایک انقلابی جست ہے جس کے اثرات پورے یورپ پر مرتب ہوں گے۔ […]

July 6, 2015 ×
ملینیم ڈویلپمنٹ گول مول

ملینیم ڈویلپمنٹ گول مول

| تحریر: عمران کامیانہ | یکم جون 2013ء کو شائع ہونے والے ’’اکانومسٹ‘‘ کے شمارے کا سرورق بڑا دلچسپ تھا۔ سرخی کا عنوان ’’غربت کے خاتمے کی طرف دنیا کی اگلی بڑی چھلانگ‘‘ تھا۔ متعلقہ مضمون میں انسانیت کو یہ ’خوشخبری‘ سنائی گئی تھی کہ غربت بہت جلد قصہ ماضی […]

June 7, 2015 ×
معروضی اور موضوعی قدر کی بحث

معروضی اور موضوعی قدر کی بحث

| تحریر: عمران کامیانہ | ’’ایک انقلابی نظرئیے کے بغیر کوئی انقلابی تحریک برپا نہیں ہوسکتی‘‘ (ولادیمیر لینن) آج کے پرانتشار عہد میں ’’نظریہ قدر‘‘ (Value Theory) کی بحث بظاہر دانشوروں کا شغل معلوم ہوتی ہے جس کا ’’عملی‘‘ سیاسی جدوجہد سے کوئی واسطہ نہیں ہے۔ تاہم نظریہ قدر سرمایہ […]

December 24, 2014 ×
سی آئی اے کی اذیت گاہوں کی داستان

سی آئی اے کی اذیت گاہوں کی داستان

[تحریر: جان پیٹرسن، عمران کامیانہ] 1948ء میں مشہور انقلابی مصنف جارج اورویل نے اپنا شہرہ آفاق ناول ’’1984‘‘ کے عنوان سے لکھا تھا۔ طنز پر مبنی یہ ناول ایک ایسی فرضی ریاست کے گرد گھومتا ہے جہاں ہر وزارت کا نام اس کے کام سے الٹ ہے، مثلاً وزارت جنگ […]

December 14, 2014 ×
یوکرائن کی خونریز بندربانٹ!

یوکرائن کی خونریز بندربانٹ!

[تحریر: لال خان، عمران کامیانہ] عراق میں اسلامک سٹیٹ کا ابھار ہو یا یوکرائن میں جاری خانہ جنگی، سرمایہ دارانہ نظام کی متروکیت دنیا بھر میں خونریزی کی شدت بڑھاتی چلی جارہی ہے۔ بحران کے اس عہد میں یہ نظام کسی بھی تنازعے کو سلجھانے کی صلاحیت سے محروم ہو […]

September 22, 2014 ×
مالاکنڈ: تین روزہ نیشنل مارکسی یوتھ سکول 2014ء

مالاکنڈ: تین روزہ نیشنل مارکسی یوتھ سکول 2014ء

[رپورٹ: کامریڈ سنگین، فوٹوگرافی: حارث قدیر] تین روزہ نیشنل مارکسی یوتھ سکول 2014ء (موسم گرما) کا انعقاد 8، 9 اور 10 اگست کو مالاکنڈ (سوات) میں ہوا۔ طویل فاصلوں، مہنگائی، کٹھن سفر اور علاقے میں سیکیورٹی کی نازک صورتحال کے باوجود ملک بھر سے 26 خواتین سمیت 222 نوجوانوں نے […]

August 22, 2014 ×
یوکرائن: امریکی سامراج کی بے بسی

یوکرائن: امریکی سامراج کی بے بسی

[تحریر: عمران کامیانہ] 1991ء میں سوویت یونین کے ٹوٹنے پر مغربی سامراجی خوشی کے شادیانے بجارہے تھے۔ 1943ء میں سوویت یونین کے انہدام کا تناظر پیش کرنے والے عظیم مارکسی انقلابی ٹیڈ گرانٹ (1913-2006) نے 1991ء کے واقعات پر تبصرہ کرتے ہوئے لکھا تھا کہ ’’آج یہ سامراجی جشن کے […]

March 26, 2014 ×