مظفر آباد میں ایک روزہ مارکسی سکول کا انعقاد

رپورٹ: JKNSF مظفرآباد

مورخہ 27 جنوری 2018ء بروز ہفتہ دن 11 بجے مظفرآباد میں مارکسی سکول کا انعقاد کیا گیا۔ سکول مجموعی طور پردو سیشنز ’عالمی اور ملکی صورتحال‘ اور ’ریاست اور انقلاب‘ پر مشتمل تھا۔ پہلے اسیشن پر لیڈ آف دیتے ہوئے طارق چغتائی نے عالمی معاشی، سیاسی اور سماجی صورتحال کا تفصیل سے جائز لیتے ہوئے کہا کہ آج عالمی طور پر سرمایہ دارانہ نظام مکمل طو ر پر مفلوج ہو چکا ہے۔ عام انسانوں کا معیارِ زندگی مسلسل گر رہا ہے۔ معیشتیں زوال پذیر ہیں اور سیاسی بحرانات مسلسل بڑھ رہے ہیں۔ عام انسانوں کے پاس اس نظام کو اکھاڑ کر پھینکنے اور سوشلسٹ انقلاب برپا کرنے کے سوا کوئی چارہ نہیں ہے۔ احمد ،حسنین، عادل نے بھی بحث میں حصہ لیا اور سوالات کی روشنی میں راشد شیخ نے پہلے اسیشن کا سم اپ کیا۔

دوسرے سیشن میں ریاست اور انقلاب پر لیڈ آف دیتے ہوئے اویس علی نے ریاست کے ارتقا پر روشنی ڈالی اور بتایا کہ ایسے سماج بھی گزرے ہیں جہاں پر ہمیں ریاست کا وجود نظر نہیں آتا، ریاست نہ ہی اخلاقی ادارہ ہے اور نہ ہی عقل و دانش کی پیداوار ہے بلکہ ریاست ارتقا کی خاص منزل پر طبقاتی سماج کی پیدا وار ہے اور اسی طرح انقلاب کے بعد ریاست کے رفتہ رفتہ مٹنے کے حوالے سے بھی تفصیل کے ساتھ بات کی۔ باسط،آصف، چوہدری شکور اور طارق چغتائی نے موضوع پر اظہار خیال کیا اور سوالات کی روشنی میں نوید اسحاق نے دوسرے سیشن کا سم اپ کیا۔ دونوں اسیشنز کو چیئر آصف فرید نے کیا اور آخر میں انٹرنیشنل گا کر سکول کا باقاعدہ اختتام کیا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*