Marxist Education

نوجوان سیاسی کارکنوں کو بھگت سنگھ کا پیغام

نوجوان سیاسی کارکنوں کو بھگت سنگھ کا پیغام

’’حتمی مقصد کو واضح کر لینے کے بعد ہی آپ، اپنی قوتوں کو عملی کاروائی کے لئے منظم کر سکتے ہیں‘‘

March 23, 2017 ×
سماجی ارتقا کی انقلابی جست

سماجی ارتقا کی انقلابی جست

پاکستان جیسے ممالک میں پرولتاریہ بحیثیت مجموعی ایک پسماندہ سماج میں جدید ترین فرائض کے حامل انقلاب کا امین اور علمبردار ہے۔

January 25, 2017 ×
رجعتی ٹریڈ یونینز، بورژوا پارلیمانیت اور انقلابی سوشلزم

رجعتی ٹریڈ یونینز، بورژوا پارلیمانیت اور انقلابی سوشلزم

اگر آپ ’’عوام‘‘ کے کام آنا چاہتے ہیں‘ اگرآپ ’’عوام‘‘ کی ہمدردی اور حمایت چاہتے ہیں تو پھر مشکلات سے ڈرنا نہیں چاہئے‘ زحمتوں سے نہیں گھبرانا چاہئے‘ بلکہ لازمی طور پر جہاں بھی عوام موجود ہوں وہاں کام کرنا چاہئے۔

July 11, 2016 ×
عوامی تنظیموں کا معاملہ

عوامی تنظیموں کا معاملہ

محنت کش طبقہ کبھی بھی چھوٹی تنظیموں کی طرف نہیں جاتا حتیٰ کہ ان تنظیموں کے پروگرام ہزار فیصد درست ہی کیوں نہ ہوں، وہ ان گروہوں کو خاطر میں ہی نہیں لاتا اور ناگزیر طور پر پہلے سے موجود عوامی تنظیموں کے ذریعے اپنا اظہار کرتا ہے۔

June 16, 2016 ×
ووڈکا، چرچ اور سینما

ووڈکا، چرچ اور سینما

کشش اور تفریح کے لحاظ سے سینما پہلے ہی شراب خانے کا مد مقابل ہے۔ میں نہیں جانتا کہ نیو یارک اور پیرس میں اس وقت زیادہ سینما گھر ہیں یا شراب خانے یا ان میں سے کس کی زیادہ آمدن ہے۔

June 8, 2016 ×
انٹرازم کے مسائل

انٹرازم کے مسائل

افسوس! محنت کش طبقے کی تحریک سیدھی لکیر میں آگے نہیں بڑھتی۔ وگرنہ سرمایہ داری کا خاتمہ دہائیاں پہلے ہو چکا ہوتا۔

May 22, 2016 ×
آرٹ، سماجی ارتقا اور سوشلزم

آرٹ، سماجی ارتقا اور سوشلزم

| تحریر: عصمت پروین | ’’سوشلسٹ بنیادوں پر سماج کی تعمیر لٹریچر، ڈرامہ، مصوری، موسیقی اور فن تعمیر سمیت آرٹ کی ہر شکل کو جلا بخشے گی۔ کمیونسٹ سماج میں انسان آرٹ کو اس کے بلند ترین مقام پر لے جائے گا۔ انسان بے انتہا مضبوط، ذہین اور لطیف ہو […]

May 7, 2016 ×
ہے بھیڑ اتنی پر دل اکیلا!

ہے بھیڑ اتنی پر دل اکیلا!

| تحریر: لال خان | آج اس معاشرے کے تمام انسان جس کرب میں مبتلا ہیں اس نے زندگی کو تلخ اور مسلسل تناؤ کا شکار کردیا ہے۔ معاشرے میں اتنا انتشار ہے کہ ہر چیز اور ہر حرکت میں ایک تیزی اور اکتاہٹ ہے۔ ہر کام کو جلد سے […]

May 3, 2016 ×
مارکسزم کا نظریہ ریاست

مارکسزم کا نظریہ ریاست

| ٹیڈ گرانٹ کی کتاب ’’روس انقلاب سے رد انقلاب تک‘‘ سے اقتباس | ’’تاریخی غلاظت کو ہٹا کر خالی کی گئی جگہ پر اب ہم ایک ہوادار اور اونچی سوشلسٹ سماج کی شاندار عمارت کی تعمیر کا کام شروع کرینگے۔ ‘‘ (لینن۔ 8 نومبر1917ء)

April 15, 2016 ×
انقلابِ مسلسل کیا ہے؟

انقلابِ مسلسل کیا ہے؟

| تحریر: لیون ٹراٹسکی، ترجمہ: عمران کامیانہ | 1931ء میں شائع ہونے والی لیون ٹراٹسکی کی کتاب ’’انقلاب مسلسل‘‘ کے آخری باب سے اقتباس۔ میں امید کرتا ہوں کہ قاری کو اعتراض نہیں ہو گا اگر کچھ باتوں کو دہرا کر میں بنیادی نتائج اخذ کرتے ہوئے اس کتاب کا […]

April 5, 2016 ×
ایک انقلابی صورتِ حال کیا ہوتی ہے؟

ایک انقلابی صورتِ حال کیا ہوتی ہے؟

| تحریر: لیون ٹراٹسکی، تلخیص و ترجمہ: کامریڈ سیفی | نومبر 1931ء کی یہ تحریر کامریڈ لیون ٹراٹسکی اور کمیونسٹ لیگ آف امریکہ کی نیشنل کمیٹی (اپوزیشن) کے ممبر کامریڈ البرٹ گلا ٹزرکے درمیان ہونے والی بحث کا نتیجہ ہے۔ ٹراٹسکی نے یہ تجزیہ 1930ء کی دہائی کے انگلستان کو […]

April 2, 2016 ×
معاشی بحران اور کم سے کم اجرت کی لڑائی

معاشی بحران اور کم سے کم اجرت کی لڑائی

| تحریر: جان پیٹرسن، ترجمہ: حسن جان | ’’عظیم کسادبازاری‘‘ توجون 2009ء میں ’تکنیکی‘ لحاظ سے ختم ہوگئی لیکن درحقیقت اصل چیز مکمل روزگار کی عدم فراہمی اور معیار زندگی میں مسلسل ابتری ہے۔ سرمایہ داری کی ان چیزوں کی فراہمی میں ناکامی انفرادی بد اندیشی یا لاپرواہی کی وجہ […]

January 4, 2016 ×
جمہوریت کے حسن

جمہوریت کے حسن

| تحریر: لال خان | حالیہ بلدیاتی انتخابات کی طویل براہ راست نشریات کے دوران تجزیہ نگاروں نے ان انتخابات کو ’’گراس روٹ ڈیموکریسی‘‘، جمہوریت کے نکھار اور تسلسل وغیرہ کے لئے بڑا اہم قرار دیا ہے۔ بعض نے تو انتخابات میں ہونے والی قتل و غارت، دھینگا مشتی اور […]

November 2, 2015 ×
عسکریت کا بانجھ پن

عسکریت کا بانجھ پن

| تحریر: لال خان | سماجی سائنس کا قانون ہے کہ جب بھی کوئی معاشرہ تغیر سے محروم ہوجاتا ہے تو تاریخ کی حرکت بظاہر رک سی جاتی ہے۔ سماجی تضادات کا دباؤ تو بہرحال موجود رہتا ہے۔ اس کی طاقت معاشرتی انجن کوآگے نہیں بڑھا پاتی تو پھر یہ […]

October 7, 2015 ×
سرمائے کی جدید غلام داری

سرمائے کی جدید غلام داری

| تحریر: عدیل زیدی | نسل انسان اپنے ارتقا کے ایک مرحلے پر غلام دارانہ نظام سے گزری ہے اور اس طریقہ پیداوار سے زمین پر اپنی نسل کو آگے بڑھایا۔ لیکن اس وقت ان غلاموں سے حاصل کی گئی پیداوار کا مقصد انسانی ضروریات پیدا کرنا تھا نہ کہ […]

August 26, 2015 ×