Art

’جی آیا صاحب!‘

’جی آیا صاحب!‘

کچھ اور سوچے بغیر قاسم نے تیز دھار چاقو اٹھا اپنی انگلیپر پھیر لیا۔ اب وہ شام کے وقت برتن صاف کرنے کی زحمت سے بہت دور تھا۔

March 2, 2017 ×
’غلاظت‘

’غلاظت‘

لاریوں میں بھی سماجی زندگی کی طرح تین درجے ہوتے ہیں۔ ’’فرسٹ‘‘، ’’سیکنڈ‘‘ اور’’ پبلک‘‘ یعنی اُمرا، شرفا اور عامی۔

November 19, 2016 ×
تاج محل

تاج محل

اک شہنشاہ نے دولت کا سہارا لے کر… ہم غریبوں کی محبت کا اڑایا ہے مذاق!

October 14, 2016 ×
دانی

دانی

وہ جب بھی سوچنے کی کوشش کرتا تھا اس کے ذہن میں ایک بہت بڑی خوفناک بھوک کا خیال آتا تھا۔ جس کی وجہ سے اس کی ماں نے تنگ آ کے اسے اس کے چچا کے حوالے کر دیا۔

October 11, 2016 ×
’امن کا فسانہ‘

’امن کا فسانہ‘

چے گویرا کی 49ویں برسی پر…

October 9, 2016 ×
لوح و قلم

لوح و قلم

ہاں تلخئ ایام ابھی اور بڑھے گی… ہاں اہلِ ستم، مشقِ ستم کرتے رہیں گے!

October 6, 2016 ×
اے شریف انسانو!

اے شریف انسانو!

جنگ تو خود ہی ایک مسئلہ ہے… جنگ مسئلوں کا حل کیا دے گی؟

September 22, 2016 ×
’ترانہ‘

’ترانہ‘

چلتے بھی چلو، کہ اب ڈیرے منزل ہی پہ ڈالے جائیں گے…

September 18, 2016 ×
نجات

نجات

برہمن چمار کی لاش کیسے اٹھاتے؟ بھلا ایسا کسی شاستر پوران میں لکھا ہو، کہیں کوئی دکھا دے۔

September 16, 2016 ×
انتساب

انتساب

آج کے نام اور آج کے غم کے نام…

September 15, 2016 ×
عید گاہ

عید گاہ

”حامد ۔“ وہ سات آٹھ سال کا غریب صورت بچہ ہے۔ جس کا باپ پچھلے سال ہیضہ کی نذر ہوگیا اور ماں نہ جانے کیوں زرد ہوتی ہوتی ایک دن مر گئی۔

September 14, 2016 ×
مِرے گیت

مِرے گیت

میں چاہوں بھی تو خواب آور ترانے گا نہیں سکتا​…

September 13, 2016 ×
مادام

مادام

بھوک، آداب کے سانچوں‌ میں ڈھل نہیں‌ سکتی!

August 26, 2016 ×
بنیاد کچھ تو ہو!

بنیاد کچھ تو ہو!

بولو کہ روزِ عدل کی بنیاد کچھ تو ہو!

August 21, 2016 ×
صبح آزادی – اگست 1947ء

صبح آزادی – اگست 1947ء

چلے چلو کہ وہ منزل ابھی نہیں آئی…

August 13, 2016 ×