ترکی (ایس ای پی) 25 تا 29 اگست 2019ء کو سوشلسٹ مزدور پارٹی (ایس ای پی) ترکی کی جانب سے موسم گرما کے کیمپ کا انعقاد کیا گیا جو انٹر نیشنل سوشلسٹ لیگ (ISL) کا پہلا بین الاقوامی سمر کیمپ تھا۔ کیمپ میں ارجنٹینا سے ایم ایس ٹی، اسپین سے ایس او ایل اور پاکستان سے طبقاتی جدوجہد کے ساتھیوں نے بھی شرکت کی۔

ہر سال کی طرح کیمپ میں ہونے والی سرگرمیوں اور ورکشاپس کا بنیادی مقصد شرکت کرنے والے کامریڈوں کی نظریاتی اور عملی بنیادوں کو مظبوطی فراہم کرنا تھا۔ کیمپ کا باقاعدہ آغاز ایس ای پی کی قیادت میں سے کامریڈ گنیش گومس کی ابتدائی لیڈ آف سے ہوا۔

کیمپ کے پہلے سیشن کا موضوع ”انٹرنیشل سوشلسٹ لیگ‘ ایک نئی بین الاقوامی تنظیم“ تھا جس میں ایس ای پی کے وی یو ارسلان، ایم ایس ٹی کے ماریانو روزا اور طبقاتی جدوجہد کے عمران کامیانہ نے خطاب کیا۔ انٹرنیشنل سوشلسٹ لیگ کا پروگرام، حکمتِ عملی اور تنظیمی طریقہ کار تفصیل سے زیرِ بحث آیا۔

طبقاتی جدوجہد کے کامریڈ نے پاکستان سے متعلق اپنے تجربات سے تمام ساتھیوں کو آگاہ کیا۔ تینوں ممالک (اسپین، ارجنٹینااور پاکستان) جو اس وقت شدید معاشی بحران کا شکار ہیں، کے ساتھیوں نے انٹرنیشنل سوشلسٹ لیگ کے اس تاریخی قدم کو سراہا اور کہا کہ بین الاقوامی یکجہتی اور جدوجہد سے پوری دنیا میں عالمی سوشلسٹ تحریک کو نئے مواقع ملیں گے۔ بین الاقوامی سوشلسٹ تنظیموں کے بحران سے نبردآزما ہونے کے لئے ایک طبقاتی لینن اسٹ پروگرام کے تحت انٹرنیشنل سوشلسٹ لیگ اپنی توانائیوں اور طاقتوں کو وسعت دیتی رہے گی۔

انٹرنیشنل سوشلسٹ لیگ کے ساتھیوں کی شرکت نے ارجنٹائن، اسپین اور پاکستان کے انقلابی تجربات کو دیگر کامریڈوں تک پہنچانے کے لئے اہم مواقع پیدا کیے ہیں جو ایس ای پی کے انقلابیوں کے لئے ایک بہت ہی اہم بین الاقوامی تجربہ ہے۔ یہ کہنا ضروری ہے کہ یہ بحث پورے کیمپ میں جاری رہی اور ہم اس معاملے پر ایس ای پی کے کامریڈوں کی انقلابی تڑپ کو واضح طور پر دیکھ سکتے تھے۔

بین الاقوامی کیمپ میں بہت سارے موضوعات جیسے معیشت، موجودہ طبقاتی جدوجہد، سامراجیت، بین الاقوامیت، خواتین کی جدوجہد، ماحولیات، نوجوانوں کے مسائل اور کچھ دیگر تاریخی اور نظریاتی امور پر سیر حاصل بحث کی گئی۔ ورکشاپوں میں کامریڈوں کو احتجاج، مباحثے اور پروپیگنڈے پر اپنی صلاحیتوں کو نکھارنے کا موقع ملا۔

کشمیری عوام پر جبر اور ایمازون کے جنگلات میں لگی آگ کے معاملات پر اظہارِ یکجہتی اور احتجاج بھی بین الاقوامی کیمپ کے ایجنڈے میں شامل تھے۔

’پراکسس‘ میوزک بینڈ کو ہم نے اس سال کیمپ میں مدعو کیا تھا۔ اس نے ہمارے کیمپ کو شاندار موسیقی سے چار چاند لگا دیئے۔ کنسرٹ سے قبل ”ترکی میں مزاحمتی میوزک کی تاریخ“ کے عنوان سے ایک پریزنٹیشن بھی پیش کی گئی۔ کنسرٹ میں ’پراکسس‘ نے ہمارے کیمپ میں انقلابی گانوں اور دھنوں سے جوش اور ولولہ پیدا کر دیا۔

ایس ای پی کی حیثیت سے ہم جو بھی قدم اٹھاتے ہیں اور جس سرگرمی کو بھی منظم کرتے ہیں وہ عالمی انقلاب کے ہمارے حتمی مقصد کا صرف ایک حصہ ہے۔ اس لحاظ سے انٹرنیشنل سوشلسٹ لیگ کا پہلا بین الاقوامی سمر کیمپ کامیاب اور تاریخی تھا۔

پوری دنیا میں موجود سرمایہ داری کا بحران انقلابی جماعتوں کی بین الاقوامی تنظیم کو انقلابی مواقع فراہم کر رہا ہے۔ صحیح سیاسی طریقوں اور حکمت عملی کو انتھک انقلابیوں کے ساتھ جوڑنے کی ضرورت ہے اور انٹرنیشنل سوشلسٹ لیگ جدوجہد کا ہر لمحہ اس فارمولے کو عملی جامہ پہنانے کی کوشش کرتی رہے گی۔

کیمپ کے بعد کامریڈز کان کنی کرنے والی کمپنیوں کے خلاف جدوجہد کی حمایت کرنے کے لئے ماؤنٹ اِڈا گئے۔ ایس ای پی جو کئی ہفتوں سے اِس جدوجہد میں حصہ لے رہی تھی نے بین الاقوامی کان کنی کرنے والی کمپنیوں کے نفع کے لئے ماحولیاتی تباہی کے خلاف ایک بین الاقوامی تحریک کا اہتمام کیا ہے۔ نہ صرف اِڈا پہاڑوں میں بلکہ یہ جدوجہد استنبول اور انقرہ جیسے میٹروپولیٹن شہروں میں بھی پھیلے گی اور ہر علاقہ جہاں یہ تباہی واقع ہوگی ہماری ایجی ٹیشن کا اولین ہدف ہوگا۔ اس موقع پر ایس ای پی کی رہنما گنیش اور ایم ایس ٹی سے ماریانو روزا نے اپنی تقاریر کیں اور اعلان کیا کہ جہاں جہاں سرمایہ دار ہمارے سیارے کو تباہ کریں گے، وہاں انقلابی سوشلسٹ بھی ان کے خلاف جدوجہد کریں گے۔